Vertical Grid Post

افسانہ

جنّت — طارق عزیز

حنیف نے بیوی کی فرمائش پر اپنے اکلوتے بیٹے حبیب کو آئی ٹی کی اعلیٰ تعلیم کے لیے امریکا بھجوا دیا تھا۔ ”ارے میاں جی میں کہتی ہوں کہ جب ہمارا بیٹا امریکا سے اعلیٰ

Loading

Read More »
افسانہ

رین کوٹ — ہاشم ندیم

کاجل کی شادی کے بعد نعمان کا بھی اس شہر میں دل نہ لگا اور وہ سب کچھ چھوڑ چھاڑ کسی دوست کی وساطت سے امریکا چلا گیا۔ وہاں اس کے دل کے زخم تو

Loading

Read More »
افسانہ

بارِ گراں — افشاں علی

”انفال!” اپنے نام کی پکار پر انفال نے گردن اٹھائی اور دروازے کی سمت دیکھا، جہاں صائمہ باجی کھڑی تھیں۔ ”یار سوری! میں اس وقت چلی آئی۔ مجھے ایک چھوٹا سا کام تھا۔” کمرے میں

Loading

Read More »
افسانہ

مٹی کے پتلے — قرۃ العین خرم ہاشمی

” تمہی نے تو کہا ہے کہ کبھی کبھی اپنی بند گلی کا ایک سرا، کسی دوسرے کی زندگی سے ہو کر گزرتا ہے!” ”میں کچھ سمجھی نہیں ؟” اب کی بار بختاور سچ میں

Loading

Read More »
افسانہ

سرپرست — فوزیہ احسان رانا

اسم کی اپنی خالہ زاد سے نسبت اس وقت سے نانی اماں نے طے کر رکھی تھی جب وہ بہت چھوٹا تھا۔ جب وہ انجینئرنگ کر رہا تھا تب اسے وشمہ اچھی لگنے لگی۔ وہ

Loading

Read More »
افسانہ

پہیہ —- نوید اکبر

اُس کا جی چاہتا تھا کہ وہ اپنے دل کی سب باتیں شہاب سے کہہ ڈالے۔ اپنی گاڑی، اپنی کتابیں، اپنی تصویریں، اپنا گھر، اپنی بوا، اپنا ٹونی۔ ایک دن ٹونی کو زنجیر پہنائی اور

Loading

Read More »
افسانہ

درد کا درد —- عشوہ رانا

وہ درد جو میں نے کل محسوس کیا…وہ پاکستان میں روز کہیں نہ کہیں کوئی نہ کوئی خاندان محسوس کرتا ہے۔ وہ ننھی سی چڑیا…ہمارے صحن کے اک کونے میں بیٹھی تھی… سہمی سی… مجھے

Loading

Read More »
افسانہ

احساس — ثمینہ طاہر بٹ

ان لوگوں کی صبح عموماً دوپہر چڑھے ہوتی تھی۔ قمر جمیل کا آنکھ کُھلتے ہی پہلا کام ٹی وی آن کرنا ہوتا تھا۔ انہیں نرگس اور دیدار کے اسٹیج ڈانس بہت پسند تھے، سو گھر

Loading

Read More »
error: Content is protected !!