Vertical Grid Post

افسانہ

احساس — صبغہ احمد

یونیورسٹی کے گیٹ نمبر6 کے بالکل سامنے فوڈ سٹریٹ پر جاتی سڑک پر آج بہت زیادہ رونق تھی۔ آسمان پر کالے سیاہ بادل اُمڈتے چلے آ رہے تھے جو اس بات کی نوید دے رہے

Loading

Read More »
افسانہ

کھیل ختم — ماہ وش طالب

میں عاشق مزاج سا بندہ نجانے اب تک کتنوں کے دل سے کھیل چکا تھا اور یہ شغل جاری ہی رہتا اگر وہ پری وش میرے خوابوں سے نکل کر حقیقت میں میرے حواسوں پر

Loading

Read More »
افسانہ

بانجھ — میمونہ صدف

سات سال قبل جب وہ بیاہ کر اُس آنگن میں آئی تھی تو افشاں سی بکھر گئی۔ حنا کی سرخی ہاتھوں پیروں پر چڑھائے ، جھانجر کی چھن چھن کرتی ، قلقل ہنستی وہ نیناں

Loading

Read More »
افسانہ

یاد دہانی — الصی محبوب

’’ارم ارم میرے کپڑے استری نہیں کیے؟ تم نے میں آفس سے لیٹ ہو رہا ہوں۔‘‘ عامر نے اپنی بیوی ارم کو نیند سے جگاتے ہوئے کہا۔ ’’جی میری آنکھ نہیں کھلی پلیز آج آپ

Loading

Read More »
افسانہ

جو ملے تھے راستے میں — سما چوہدری

’’کیا ہوا تھا اسے گوہر بتاؤ مجھے گوہر۔‘‘ اسد اس کے منہ پر ہاتھ مارتے اسے ہوش میں لا رہا تھا۔ کبھی پانی کے چھینٹے مارتا ۔ گوہر ہڑبھڑا کر اٹھا۔ اسد اس کے چہرے

Loading

Read More »
افسانہ

بت شکن ۔۔۔ ملک حفصہ

مولوی صاحب اور جماعت کے ساتھیوں کے درمیان بیٹھا وہ ہر طرح کی ذہنی فکر سے آزاد تھا۔ خیال بھی نیک اور اعمال بھی نیک ہوں، تو انسان ایسے ہی ہلکا ہوا میں پنچھی کی

Loading

Read More »
افسانہ

ہم زاد — سحرش رانی

وہ تاریک راہداری سے گزرتے ہوئے خوف زدہ ہورہا تھا۔ سامنے چھوٹا سا ہال نما کمرہ تھا۔ وہاں اور بھی بہت سے لوگ بیٹھے تھے۔ وہ بھی خاموشی سے جاکر بیٹھ گیا۔ اس کا دل

Loading

Read More »
افسانہ

اب اور نہیں — ایمان عائشہ

ان دنوں زندگی کی ٹرین بھی کیسے چھکا چھک کرتی گزرتی جارہی تھی۔ عمر رفتہ کے ڈبے بھی تیزی سے آنکھوں کے آگے سے گم ہوتے چلے جارہے تھے۔ میری عمر کی ڈور میں یکے

Loading

Read More »
error: Content is protected !!