نعت رسولِ مقبولۖ

نعت رسولِ مقبولۖ
سید عطاالمصطفیٰ

اے کاش کبھی ہو جو رسائی ترے در کی
کرتا رہوں دن رات گدائی ترے در کی

آنکھوں کے لیے سرمہ ِ نایاب تھا درکار
سو خاک مدینے سے منگائی ترے در کی

ہے جن و بشراور ملائک کا وظیفہ
کرتے ہیں بیاں سب ہی بڑائی ترے در کی

احوالِ مدینہ سنا زائر سے تو ہم نے
تصویر خیالوں میں بنائی ترے در کی

اک درجہ سکوں ہوگی ترے در کی زیارت
اک بارِ گراں ہوگی جدائی ترے در کی

مجھ کو نہ ہی مخمل نہ ہی کمخواب کی حاجت
سرکار عطا ہو جو چٹائی ترے در کی
٭…٭…٭

 145 views

Read Previous

آؤ کھانا کھائیں

Read Next

محمدۖہمارے

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!