رات کو دیکھوں!

رات کو دیکھوں!
صوبیہ اطہر

رات کو دیکھوں، جی للچائے
کوئی تارا ہاتھ میں آئے

امی بولیں بیٹے پیارے
تم بھی تو ہو میرے تارے

پُھولے گال، چمکتی آنکھیں
خُوش بو، خُوش بو، مہکی سانسیں

ننھے منّے پیارے پیارے
ربّ نے بنائے کتنے سارے

ٹِم ٹِم کرتے پیارے تارے
دیکھو ربّ کی قدرت سارے

٭…٭…٭

 131 views

Read Previous

ہمیں اُن سے عقیدت ہے

Read Next

آؤ کھانا کھائیں

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!