موت | سو لفظی کہانی

سو لفظی کہانی
موت
عفت خان

اسلامیات کا ٹیچر مرنے کے بعد کی زندگی پر لیکچر دے رہا تھا۔
یہ دنیا دار الامتحان ہے اور آخرت یومِ جزا ہے۔
لہٰذا ہمیں چاہیے کہ مرنے سے پہلے پہلے موت کی تیاری کرلیں۔
کونے میں بیٹھا طالب علم ایک کان سے سن کر دوسرے کان سے نکال رہا تھا۔
ابھی کس نے مرنا ہے۔ بہت وقت پڑا ہے۔
کالج سے گھر واپسی پر روڈ حادثے کا شکار ہوا تو موت خوف بن کر بھوکے گدھ کی طرح اس کے سر پہ منڈلانے لگی۔
لیکن بہت دیر ہوچکی تھی…

٭…٭…٭

admin

Read Previous

مہربان | سو لفظی کہانی

Read Next

پڑوسن | سو لفظی کہانی

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!